3 ایشیائی ممالک دنیا کے طاقت ور ترین پاسپورٹس کے مالک

دنیا کے طاقت ور ترین پاسپورٹس کا اعزاز 3 ایشیائی ممالک کو حاصل ہوگیا ہے۔
پاسپورٹ کی درجہ بندی جاری کرنے والے ادارے ہینلے اینڈ پارٹنرز نے 2022 کی تیسری سہ ماہی کے لیے طاقت ور ترین پاسپورٹس کی فہرست جاری کی ہے۔
اس فہرست کے مطابق جاپانی پاسپورٹ دنیا میں سب سے طاقت ور ہے جس کو رکھنے والا فرد ویزا لیے بغیر 193 ممالک کا سفر کرسکتا ہے۔
سنگاپور اور جنوبی کوریا مشترکہ طور پر دوسرے نمبر پر ہیں اور وہاں کے شہریوں کو 192 ممالک میں جانے کے لیے ویزے کی ضرورت نہیں۔
3 ایشیائی ممالک کے بعد یورپی ممالک ہی درجہ بندی میں چھائے ہوئے ہیں۔
فن لینڈ، اٹلی اور لکسمبرگ کے پاسپورٹس مشترکہ طور پر چوتھے نمبر پر رہے جن کے حامل افراد 189 ممالک کا سفر ویزے کے بغیر کرسکتے ہیں۔
اسی طرح 188 ممالک کے ویزا فری سفر کے ساتھ آسٹریا، ڈنمارک، نیدرلینڈز اور سوئیڈن 5 ویں نمبر پر موجود ہیں۔
فرانس، آئرلینڈ، پرتگال اور برطانیہ سے تعلق رکھنے والے شہریوں کو 187 ممالک میں ویزے کے بغیر سفر کرنے کی سہول حاصل ہے اور ان ممالک کے پاسپورٹس اس فہرست میں چھٹے نمبر پر ہیں۔
بیلجیئم، نیوزی لینڈ، ناروے، سوئٹزرلینڈ اور امریکا کے پاسپورٹس پر 186 ممالک کا سفر ویزا کے بغیر کرنا ممکن ہے اور یہ فہرست میں 7 ویں نمبر پر ہیں۔
8 واں نمبر مشترکہ طور پر آسٹریلیا، کینیڈا، چیک ریپبلک، یونان اور مالٹا کے نام رہا جن کے شہری 185 ممالک میں پاسپورٹ دکھا کر ویزے کے بغیر داخل ہوسکتے ہیں۔
ہنگری کا پاسپورٹ 9 ویں نمبر پر رہا جبکہ 10 ویں نمبر پر لتھوانیا، پولینڈ اور سلواکیہ کے پاسپورٹس رہے۔
سب سے کم ممالک تک ویزا فری رسائی حاصل کرنے والے پاسپورٹس
اس فہرست میں پاکستان کمزور ترین پاسپورٹ رکھنے والا چوتھا ملک قرار پایا جو 109 ویں نمبر پر موجود ہے۔
پاکستانی پاسپورٹ پر 32 ممالک میں ویزے کے بغیر سفر کیا جاسکتا ہے۔
پاکستان سے نیچے شام (110 ویں نمبر پر)، عراق (111 ویں نمبر پر) اور افغانستان (112 ویں نمبر پر) موجود ہیں۔
اس کے مقابلے میں یمن (108 ویں)، صومالیہ (107 ویں)، نیپال اور فلسطین (106 ویں) اور شمالی کوریا (105 ویں) پاکستان کے مقابلے میں زیادہ طاقت ور پاسپورٹ قرار پائے۔
درجہ بندی کا تعین کیسے کیا جاتا ہے؟
یہ درجہ بندی ہر سال کے شروع میں جاری کی جاتی ہے اور اس کے بعد اسے ہر 3 ماہ بعد اپ ڈیٹ کیا جاتا ہے۔
ہینلے پاسپورٹ ویزا انڈیکس کی ویب سائٹ کے مطابق ریئل ٹائم ڈیٹا کو سال بھر میں اپ ڈیٹ کیا جاتا ہے اور اس میں ویزا پالیسی میں تبدیلیوں کو بھی مدنظر رکھا گیا ہے۔
درجہ بندی کا فیصلہ اس بنیاد پر کیا جاتا ہے کہ کسی ملک کا پاسپورٹ رکھنے والا پہلے ویزا حاصل کیے بغیر کتنے دیگر ممالک کا سفر کر سکتا ہے، یعنی سفر کے لیے انہیں پہلے سے ویزا حاصل کرنے کی ضرورت نہیں ہوتی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں