بچوں سے زیادتی اور قتل کے مجرموں کا ریکارڈ طلب

گجرات (اکاش نیازی + بلال ملک سے) بچوں سے زیادتی اور قتل کے مجرموں کو سرعام پھانسی کی قرارداد منظور کئے جانے کے بعد ضلع گجرات سمیت پنجاب بھر میں گذشتہ دس سالوں کے دوران بچوں سے جنسی زیادتی اور انکے قتل کا تمام ریکارڈ آئی جی پنجاب نے مانگ لیا ھے اور اس وقت گجرات سمیت پنجاب بھر کی جیلوں میں بند بچوں سے زیادتی کرنے والے تمام قیدیوں کی تازہ فہرستیں تیار کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ھے گجرات جیل میں 5 سالوں کے دوران بچوں سے زیادتی کرنے والے قیدیوں کی بھی بڑی تعداد موجود ھے بچوں سے زیادتی کے جرم کو پاکستان کے سب سے سنگین جرم کے طور پر قانون کا حصہ بنا دیا گیا ھے قومی اسمبلی سے اس قانون کی بھاری اکٹریت سے منظوری ھو چکی ھے اور اب آیندہ سے بچوں سے زیادتی کے مقدمات میں جرم ثابت ھونے پر جنسی درندروں کو سرعام پھانسی دی جائے گی جیلوں میں پہلے سے موجود بچوں سے زیادتی کرنے والے ملزمان قیدیوں اور ان کے حال خانہ میں خوف و ہراس کی لہر دوڑ گئی ھے جبکہ بچوں کے والدین سمیت گجرات سمیت ملک بھر کے عوام کی طرف سے اس نئی قانون سازی کو بچوں کی زندگیاں اور ان کا مستقبل محفوظ بنانے کے لئے انتہائی خوش آئند قرار دیا ھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں