گجرات میں پولیس گردی تھانہ میں نوجوان ہلاک SHOاہلکاروں سمیت معطل

گجرات (نمائندہ خصوصی)تھانہ ککرالی کے علاقہ میں نوجوان کی ہلاکت کا معاملہ ڈی پی او گجرات نے نوٹس لیتے ہوئے ایس ایچ او سمیت ملوث اہلکاروں کو معطل کردیا، واقعہ کی تحقیقات کے لئے اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دے دی تفصیلات کے مطابق تھانہ ککرالی کے گاوٗں ملکہ کے رہائشی شرافت علی نے تھانہ ککرالی کو درخواست دی کہ مورخہ 05.10.20 کو چند پولیس اہلکار میرے بیٹے سخاوت علی کو اٹھا کر نامعلوم مقام پر لے گئے اور تشدد کرتے رہے اوراگلی شام مورخہ 06.10.20 کو معززین علاقہ کے کہنے پر اسے چھوڑ دیا گیا۔ جس کی حالت تشویشناک تھی میں اپنے بیٹے کو لیکر گھر آگیا جس کے بعد اسکی طبیعت دن بدن بگڑتی گئی جو مورخہ.10.20 19کو گھر پر وفات پاگیا۔مدعی کی درخواست پر تھانہ ککرالی میں ASIسمیت 5نامزد اور 3/4کس نامعلوم پولیس ملازمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔جس کی بابت ڈی پی او گجرات عمر سلامت کو اطلاع دی گئی جنہوں نے فوری نوٹس لیتے ہوئے واقعہ میں ملوث پولیس اہلکاروں کو معطل کر کے گرفتار کرنے کے احکامات جاری کئے۔نوجوان کی موت کا تعین کرنے کے لئے ڈیڈ باڈی کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جبکہ واقعہ کی تحقیقات کے لئے ایس پی انویسٹی گیشن عمران رزاق کی سربراہی میں انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی گئی جن کو واقعہ کے اصل حقائق سامنے لانے اور ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ جلد ازا جلد پیش کرنے کے ہدائیت کی گئی۔ڈی پی او گجرات کا کہنا تھا کہ تحقیقاتی رپورٹ آنے پر ملوث اہلکاروں کے خلاف مزیدقانونی کاروائی عمل میں لاکر انصاف کے تمام تقاضے پورے کئے جائیں گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں