ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کیلئے شجرکاری کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے: مہتاب وسیم

منڈی بہاوالدین(بیور و چیف)ڈپٹی کمشنر مہتاب وسیم اظہر نے کہا ہے کہ ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کیلئے شجرکاری کا فروغ وقت کی اہم ضرورت ہے، درخت زندگی اور خوشگوار ماحول کی علامت ہیں،ماحول سے فضائی آلودگی ختم کرنے کیلئے ہم سب نے مل کر شجرکاری مہم کو کامیاب بنانا ہے،اس اقدام سے ناصرف ماحول دوست فضا میسر آئیگی بلکہ معیار صحت بھی بلند ہوگا۔ سٹینڈنگ کمیٹی برائے پوسٹل سروسز/ایم این اے حاجی امتیاز احمد چوہدری نے کہا کہ غیر موافق موسمی تغیرات سے بچنے کیلئے شجرکاری ناگزیر ہے، درخت ہماری نئی نسل کے دوست ہیں اور نئی نسل کو درختوں اور پودوں سے پیار کی ترغیب دی جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج یہاں چیلیانوالہ مانومنٹ میں پلانٹ فار پاکستان ڈے کے حوالے سے ٹیکسوڈیم کا پودا لگا کر ضلع میں باقاعدہ شجرکاری مہم کا افتتاح کیا اور شجرکاری مہم کی کامیابی کیلئے دعا کی۔ شجر کاری مہم کے تحت بیک وقت1000پودے بھی لگائے گئے۔اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر ملک عباس ذوالقرنین اعوان، سی ای او ایجوکیشن ڈاکٹر سیف اللہ ڈھلوں،ڈویژن فاریسٹ آفیسر سید جواد حسین شاہ، ڈسٹرکٹ فاریسٹ آفیسر رانا محمد اکرم، سابق ناظم چیلیانوالہ چوہدری احسن گجر سمیت دیگر متعلقہ محکموں کے افسران بھی موجود تھے۔اس موقع پر ڈی او فاریسٹ رانا محمد اکرم نے بتایا کہ حکومت نے محکمہ جنگلات کو 12ایکڑ سے زائد زمین الاٹ کی ہے جہاں 2لاکھ 50ہزار پودوں کیلئے نرسری قائم کی جا رہی ہے جس پر ڈپٹی کمشنر نے ڈی او فاریسٹ کی کارکردگی کو سراہا۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر مہتاب وسیم اظہر نے طلباء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ درخت لگانا سنت رسول اور صدقہ جاریہ بھی ہے۔درخت ملکی معیشت، انسانی صحت اور بیماریوں سے نجات کا بڑا ذریعہ ہے، کسی بھی ملک کے 25فیصد رقبے پر جنگلات کا ہونا ضروری ہے لیکن بدقسمتی سے پاکستان میں صرف چار فیصد رقبے پر جنگلات پائے جاتے ہیں جو کہ انتہائی خطرناک صورتحال ہے اس سے نمٹنے کیلئے ہمیں جنگی بنیادوں پر شجرکاری کو فروغ دینا ہوگا اور درختوں کی نگہداشت کیلئے اپنی انفرادی اور اجتماعی کوششیں بروئے کار لانا ہونگی تاکہ ہماری آنے والی نسلیں صحت مند زندگی گزار سکیں۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ امسال محکمہ جنگلات منڈی بہاؤالدین کو شجرکاری مہم میں 14لاکھ پودے لگانے کا ہدف دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے سونامی پلانٹیشن پروگرام کے تحت ملک بھر میں 5سال کے عرصہ میں 10بلین پودے لگائے جائیں گے۔اس مہم میں تمام تعلیمی ادارے، ہسپتالز، سول، سکیورٹی و نجی ادارے اور عوام الناس بھی شامل ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ حکومت شجر کاری مہم اور اس کی افادیت کے حوالے سے پوری طرح سنجیدہ ہے۔چیئرمین سٹینڈنگ کمیٹی برائے پوٹل سروسز /ایم این اے حاجی امتیاز احمد چوہدری نے کہا کہ پودے آکسیجن کے حصول کا سب سے موثر ترین ذریعہ ہیں جبکہ ان سے فضائی ماحول بھی بہتر ہوتا ہے بالخصوص موسم گرما میں درختوں کی وجہ سے گرمی کی شدت کم ہے نیز درخت ایندھن، فرنیچر سمیت دیگر مفادات کے حصول کا بھی بہترین ذریعہ ہیں۔ انہوں نے اساتذہ اور طلباء پر زور دیا کہ وہ اپنے اردگرد کے ماحول کو سرسبز بنانے کی خاطر شجرکاری مہم میں اپنا حصہ ڈالیں تاکہ فضائی آلودگی کا خاتمہ کر کے شجر کاری مہم کو مستقل بنیادوں پر فروغ دیا جاسکے۔ حاجی امتیاز احمد چوہدری نے کہا کہ پنجاب بھر کی طرح ضلع بھر کے تعلیمی اداروں میں جاری شجرکاری مہم کے دوران ہزاروں نئے پودے لگائے جا رہے ہیں تاکہ طلباء بہترماحولیاتی فضا میں تعلیم حاصل کرسکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں