عوام کیساتھ نا انصافی ہو گی تو ہم کٹھ پتلی حکومت کو تسلیم نہیں کرینگے: بلاول بھٹو

گجرات (نمائندہ خصوصی)چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی ہمیشہ یہ جدوجہد رہی کہ ملک میں شفاف الیکشن ہوں، ہر ادارہ اپنی حددو میں کام کرے، عوام کیساتھ ناانصافی ہوگی تو کیا ہم اس نالائق، کٹھ پتلی اور سلیکٹڈ حکومت کو تسلیم کرلیں، سترہ سال سے جمہوریت کو چلنے نہیں دیا جارہا، عوام کے مسائل کو حل کرنے کیلئے جمہوریت کو بحال کرنا پڑے گا، اس نااہل کے جانے کا وقت آچکا ہے، لالہ موسیٰ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک کی بقاء کیلئے جدوجہد ہم تین نسلوں سے کررہے ہیں، کٹھ پتلی جس نے عوام کا جینا دو بھر کردیا ہے اس کے جانے کا وقت آگیا ہے، عوام کے مینڈیٹ اور عوامی طاقت کو ماننا ہوگا، 2020میں بھی غیر جمہوری کوششیں جاری ہیں، ان کو ایک جلسہ برداشت نہیں ہوتا، اور گلگت بلتستان میں بھی انتخابات سے قبل دھاندلی شروع ہوچکی ہے، وزیراعظم نے ہمارے راستے میں کنیٹزز رکھ دیئے ہیں، وزیراعظم نے کہا تھا دھرنا اور احتجاج کرنا چاہتے ہیں تو ہم کنٹیزدیں گے، لیکن حکومت کی طرف سے پاکستان پیپلزپارٹی کے کارکنوں اور عہدے داروں کو ہر اساں کیا جارہا ہے، چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ جو کورونا کے عروج پر لاک ڈاؤن کے مخالف تھے، آج ان کو ایس او پیز اور کورونا یاد آگیا، پاکستان میں جمہوریت ہوگی، پاکستان کی عوام غلام نہیں خود مختار ہے، آپ عوام کی ناراضگی، جذبات، بھوک افلاس کو قید نہیں کرسکتے، انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان الیکشن میں بھی پری پول دھاندلی شروع ہوچکی ہے، اگر جی بی میں دھاندلی ہوئی تو یہ سب سے بڑا قومی سلامتی کا مسئلہ ہے، ہماری ہمیشہ یہ جدوجہد رہی کہ ملک میں شفاف الیکشن ہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں