عالمی بینک نے پاکستان کو1.1 ارب ڈالر قرض کی فراہمی مؤخر کردی

عالمی بینک نے پاکستان کو ایک اعشاریہ ایک ارب ڈالر قرض کی فراہمی مؤخر کردی۔ پاکستان کیلئے قرض کی منظوری آئندہ مالی سال تک مؤخر کی گئی ہے۔
عالمی بینک نے پاکستان پر زور دیا ہے کہ درآمدات پر اضافی ٹیکس کم کیا جائے۔ قرض کی فراہمی اگلے مالی سال میں ضروری پیشگی اقدامات سے مشروط کردی گئی ہے۔
ورلڈ بینک نے رائز ٹو اور پیس ٹو نام کے دو منصوبوں کی فنڈنگ کرنا تھی۔ معیشت کے استحکام کے پروگرام رائز کےلیے 45 کروڑ ڈالر کے فنڈز بھی شامل تھے۔ سستی توانائی کے پروگرام کے لیے 60 کروڑ ڈالر کی فنڈنگ بھی مؤخر کردی گئی۔
ترجمان عالمی بینک کا کہنا ہے کہ پائیدار معیشت کیلئے بورڈ ڈسکشن مالی سال 2024 میں متوقع ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں