سپین میں نومئی سے لاک ڈاون اور نقل و حرکت پر پابندیا ں ختم

بارسلونا(جے ایم ڈی )سپین کے صوبہ کاتالونیا کے قائم مقام نائب صدر پیری اراگونس نے اعلان کیا ہے کہ نو مئی سے جب مرکزی حکومت لاک ڈاون ختم کردے گی تو کاتالونیا میں بھی رات کا کرفیو ختم کردیاجائے گا، اس کے ساتھ نقل و حرکت پر عائد پابندیاں بھی ختم کردی جائیں جس کے بعد صوبے میں داخلے اور باہر جانے پر عائد پابندی بھی ختم ہو جائے گی۔پریس کانفرنس کے دوران نائب صدر نے کہاکہ موذی وباءپر قابو پانے کے لئے پابندیاں ناگزیر تھیں۔ ان ہی قربانیوں کے باعث ہی کورونا وباءپر قابو پایا جاسکا لیکن ابھی بھی وائرس مکمل ختم نہیں ہو،ا ہمیں حفظان صحت کے اصولوں کے تحت ہی زندگی گزارنا ہوگی۔حکومت نے ملک گیر لاک ڈاون کے خاتمے کے بعد پابندیوں کو لاگو کرنے کے حوالے سے قانون سازی کے منصوبے کو فی الحال ترک کردیاہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ جولائی تک 70 فیصد آبادی کو ویکسین لگا دی جائے گی۔کاتالونیا میں چھ مہینے کے بعد رات کے کرفیو کے خاتمے کا اعلان کیاجارہاہے۔کرفیو کے علاوہ دیگر پابندیاں برقرار رہیں گی۔زیادہ سے زیادہ چھ افراد ہی اکٹھے ہوسکیں گے۔بار ریسٹورنٹس بغیر کسی وقفے کے رات 11 بجے تک کھولنے کی اجازت ہوگی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں