حکومت کورونا کیسز میں کمی کا راگ الاپنا بند کر کے ناکامیون کا اعتراف کرے: ندیم اصغر کائرہ

گجرات (عارف علی عارف)حکومت کورونا کیسز میں کمی کا راگ الاپنا بند کرکے اپنی ناکام پالیسیوں کا اعتراف کرے‘سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کے ساتھ ہونے والے سلوک کے بعد‘متاثرہ افراد خود سے ہی ہوم آئسولیٹ ہو چکے ہیں‘ عید سے چند روز قبل بغیر کسی اطلاع کے لاک ڈاؤن کرنا تاجروں کے ساتھ نا انصافی ہے ان کے ہونے والے نقصان کا ازالہ ہونا چاہیے“ اوورسیز پاکستانیوں کے ساتھ جو سلوک موجودہ حکومت کر رہی ہے وہ اس کے حق دار نہیں۔ سیاسی جماعتیں اپنے مفادات کو ترک کر کے ملکی مفاد میں اکٹھی نہ ہوئیں تو ملک کو پہنچنے والے نقصان کیلئے ہماری آنے والی نسلیں بھی ہمیں معاف نہیں کریں گی۔ حکومت کے اتحادی بھی ان سے نالاں ہیں‘ اتحادیوں کے ساتھ کامیاب حکومت چلانے والے مرد حر کا نام آصف علی زرداری ہے۔ ان خیالات کا اظہار سابق تحصیل ناظم کھاریاں اور پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما چوہدری ندیم اصغر کائرہ نے عارف علی عارف سے خصوصی گفتگو کے دوران کیا۔ چوہدری ندیم اصغر کائرہ نے کہا کہ موجودہ حکومت یوٹرن اور ناکام پالیسیوں کا اپنا ایک ریکارڈ بنانے جا رہی ہے جس وقت لاک ڈاؤن کی ضرورت تھی اس وقت لگایا نہیں اور آج بغیر کسی اطلاع کے تاجروں کے ارمانوں پر شب ِ خون مارا ہے‘ انہوں نے کہا کہ عوام کسی خوش فہمی میں نہ رہے کہ کورونا کیسز میں کمی آئی ہے حکومت اپنی ناقص پالیسیوں کو چھپانے کیلئے یہ راگ الاپ رہی ہے جس کی کوئی حقیقت نہیں نہ تو حکومت اب تک پورے ملک میں آبادی کے ایک فیصد کے ٹیسٹ کر سکی ہے جب ٹیسٹنگ نہیں ہو گی تو کیسز کیسے سامنے آئینگے اللہ تعالیٰ ہمیں اس عالمی وباء سے بچائے (آمین)‘جن افراد میں کورونا کی علامات ہیں وہ پرائیویٹ ٹیسٹ کروانے کے بعد خود کو ہوم آئسولیٹ کر چکے ہیں جس کی بڑی وجہ سرکاری ہسپتالوں میں ناکافی سہولیات ہیں۔ چوہدری ندیم اصغر کائرہ نے کہا کہ چیئرمین بلاول بھٹو زرداری پہلے ہی تمام سیاسی جماعتوں پر واضح کر چکے ہیں کہ 22کروڑ کی اس حکومت سے جان چھڑوانے کیلئے ہمارا متحد ہونا بہت ضروری ہے‘کچھ سیاسی جماعتیں ڈبل وکٹ پر کھیلنا چاہتی ہے اگر ملکی مفادات پر اپنے ذاتی مفادات کو ترجیح دی تو آنے والی نسلیں بھی ہمیں کبھی معاف نہیں کرینگیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں