بلدیاتی انتخابات حکمت عملی سے لڑیں تو جماعت اسلامی کو نمایاں کامیابی مل سکتی ہے: لیاقت بلوچ

گجرات (نمائندہ خصوصی)جماعت اسلامی کے مرکزی نائب امیرصدرسیاسی کونسل سابق ایم این اے لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ بلدیاتی انتخابات آئے ہی چاہتے ہیں اگرمقامی ذمہ داران کارکنان حکمت علمی اورتنظیمی طاقت سے الیکشن کیمسٹری کوسمجھ کر میدان میں اتریں تو جماعت اسلامی کونمایاں کامیابی مل سکتی ہے اوربڑی تعداد میں ہمارے مرد خواتین بلدیاتی کونسلرمنتخب ہوسکتے ہیں کارکنوں اپنے نظریہ منشور کے ساتھ انتخابی میدان میں پیشرفت کریں انشاء اللہ کامیابی قدم چومے گی وہ گزشتہ روزجماعت اسلامی ضلع گجرات کے زیراہتمام منعقدہ بلدیاتی کنونشن سے بطورمہمان خصوصی خطاب کررہے تھے انہوں نے کہاکہ ہمارا ملک اللہ کی نعمتوں سے مالا مال ہے صرف خوف خدا رکھنے والی اہل قیادت کی ضرورت ہے بنگلہ دیش نیپال بھوٹان سری لنکا ہم سے آگے جارہے ہیں حالانکہ ان کے اتنے وسائل نہیں ہمارے پیچھے رہنے کی وجہ نا اہل بے حس قیادت ہے لیاقت بلوچ نے کہاکہ ہماری معیشت اورسیاسی پارلیمانی نظام زوال پذیرہے عوام سوچیں کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان میں عوام کے مقدرمیں ذلت کیوں ہے کرپشن اوراختیارات کے ناجائز استعمال عام کیوں ہیں یہ صرف اس لئے ہے کہ عوام نے اہل قیادت کاچناؤ نہیں کیاہے ہماری جماعت ملک کی بڑی سیاسی جماعت ہے انشاء اللہ انتخابات کے ذریعہ ہم پاکستان کے سیاسی نظام میں انقلاب برپاکریں گے عوام میں دین کی محبت موجود ہے پاکستانی سماج اورمعاشرے کے تانے بانے سوچی سمجھی سازش کے تحت بکھیرے جارہے ہیں فرقہ واریت کوپھیلایاجارہاہے کشمیرگلگت بلتستان کے مسئلے پرآرمی چیف نے قومی قیادت کو بات چیت کے لئے مدعو کیا یہ اس لئے ہواکہ وزیراعظم قومی اتفاق رائے پیدانہیں کرسکتے جان بوجھ کراس میٹنگ کوکیوں لیک کیاگیا اس کے کیا مقاصد ہیں ہماری ریاست عوام کی بے اعتمادی کوختم کرنے کے لئے اقدامات کرے ملک میں بے اعتمادی مایوسی کی جوفضاء ہے اس کی وجہ2018کے متنازعہ انتخابات ہیں بدقسمتی سے ہمارے ملک میں ہرانتخابات مینج ہوتے ہیں اورمتنازعہ انتخابات پرآوازبلند کرنے والوں کوغداری کے الزامات کاسامنا کرنا پڑتاہے ریاستی طاقتوروں کومان لیناچاہیے کہ مینج انتخابات کاطریقہ ناکام ہوگیاہے عوام میں بے چینی بڑھ رہی ہے ہم سمجھتے ہیں کہ ملک کی ضرورت اسٹیبلشمنٹ ریاستی اداروں جمہوری قوتوں اورعوام کااتحاد ہے اوراس کے لئے شفاف غیرجانبدارانہ انتخابات ناگزیرہیں بلدیاتی انتخابات جمہوریت کی نرسری ہیں اگریہ ادارے بااختیارہوں مالیاتی نظام خود مختارہو ان کی موثرمانیٹرنگ اوراڈٹ کانظام ہو تو قومی اسمبلی سینٹ صوبائی اسمبلیاں قومی پالیسی سازی پرتوجہ دے سکتی ہیں پیپلزپارٹی پی ٹی آئی مسلم لیگ کی حکومتیں بلدیاتی اداروں کوبااختیاربنانے کے لئے تیارنہیں بلوچستان اورکے پی میں ادارے ڈیڑھ سال سے مدت پوری کرچکے ہیں پنجاب میں مدت سے پہلے بلدیاتی اداروں کوختم کردیاگیاہے ہماری سیاست ریاست اوراسٹیبلشمنٹ اپنی ترجیحات میں موثربلدیاتی اداروں کوترجیح دیں جماعت اسلامی کے کارکنان فرقہ واریت کی بڑھتی ہوئی آگ میں تحمل کامظاہرہ کریں ہم آہنگی کوفروغ دیں اے پی سی میں اس لیے شرکت نہیں کی کہ ہم اخلاص کی بنیادوں پراتحادوں کی سیاست کرتے ہیں لیکن ہمارے ساتھ دھوکہ کیاجاتاہے ہم اس نتیجہ پرپہنچے ہیں کہ اپنے بیانیہ منشورنظریات پرالیکشن کے میدان میں جائیں۔عمران خان اس لئے ناکام ہوئے کہ وہ ملک سے سٹیٹس کو کوتوڑ نہ سکے اورماضی کی پالیسیوں کوجاری رکھا جماعت اسلامی آزادانہ حیثیت سے اپوزیشن کارول ادا کررہی ہے کارکنان کامل یقین یکسو ہوکر اپنے منشورکوعوام تک پہنچائیں گجرات کے آج بلدیاتی کنونشن سے حوصلہ ملاہے کامیاب کنونشن پر ضلعی ٹیم کومبارکباد پیش کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں