اٹلی کا شہر جہاں رہائش اختیار کرنے پر 30 ہزار ڈالر ملیں گے

اٹلی کے تاریخی قصبوں کو دوبارہ آباد کرنے کیلئے مقامی انتظامیہ اور پراپرٹی ڈیلیرز کی جانب سے ایک منفرد اسکیم متعارف کرائی گئی ہے۔
اطالوی صوبے Puglia کے شہرPresicce کو دوبارہ آباد کرنے کیلئے وہاں رہائش اختیار کرنے والوں کو نہ صرف معاوضہ دیا جائے گا بلکہ بچوں کی پیدائش پر بے بی بونس اور کاروباری لوگوں کیلئے ٹیکس مراعات بھی متعارف کرائی گئی ہیں، حکام کا کہنا ہے کہ وہ خالی مکان خریدنے اور رہائش اختیار کرنے کیلئے 30,000 یورو (تقریباً 30,000 ڈالر) تک ادا کرینگے۔
اس شہر کے کچھ ایسے مکانات ہیں جنہیں انتہائی رعائیتی قیمتوں میں فروخت کیا جارہا ہے، فروخت کے لیے پیش کیے جانے والے مکانوں میں بیشتر حصہ ان پراپرٹیز کا ہے جنہیں اصل مالکان نے چھوڑ دیا ہے۔ ان کی قیمت تقریبا 25,000 یورو ہے۔
مقامی کونسلر الفریڈو پیلیس نے امریکی نشریاتی ادارے سی این این کو بتایا کہ یہ دیکھ کر افسوس ہوتا ہے کہ ہمارے پرانے تاریخی اضلاع جو شاندار فن تعمیر سے بھرے ہوئے تھے کیسے آہستہ آہستہ خالی ہو رہے ہیں۔
الفریڈو کے مطابق اگرچہ اب تک Presicce اور Acquarica میں تقریباً 9,000 رہائشی ہیں لیکن کمیونٹی کے پرانے حصوں کو اب بھی آباد ہونے کی ضرورت ہے، 1991ء سے پہلے تعمیر کیے گئے تاریخی مرکز میں بہت سے خالی گھر ہیں جنہیں ہم نئے رہائشیوں کے ساتھ دوبارہ آباد کرنا چاہتے ہیں۔
انہوں نے بتایا کہ اس مقصد کے لیے بنائے گئے منصوبے کی فنڈنگ کو دو حصوں میں تقسیم کیا جائے گا۔ پہلا حصہ پرانا گھر خریدنے میں جبکہ دوسرا حصہ ضرورت پڑنے پر اس کی دوبارہ تعمیر پر خرچ کیا جائے گا۔
الفریڈو پیلیس نے مزید کہا کہ منصوبے کو حتمی شکل دی جا چکی ہے اور اس کے لیے بہت جلد درخواستیں وصول کرنے کا عمل بھی شروع کردیا جائے گا۔ درخواست فارم اور معلومات آئندہ ہفتے سے ٹاؤن ہال کی ویب سائٹ پر دستیاب ہوں گی۔
شہر میں رہائشیوں کے لیے کئی سہولیات کا انتظام بھی کیا گیا ہے جن میں بائیک چلانے اور ٹریکنگ کے راستوں کے ساتھ، چراگاہیں اور پتھر کے قلعے شامل ہیں۔
منصوبہ ساز توقع کررہے ہیں رہائش اختیار کرنے کے عوض دی جانے والی رقم کی یہ منفرد اسکیم نہ صرف لوگوں کو اپنی جانب متوجہ کرے گی بلکہ اس سے ایک ایسا خطہ بھی آباد ہوجائے گا جہاں ہر سال نوزائیدہ بچوں کی تعداد کم ہوتی جارہی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں