لڑکی سے اجتماعی زیادتی کی تفتیش تبدیل

گجرات (آکاش نیازی) کنجاہ کے گاؤں ایشرہ میں 17 سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کے مقدمہ کی تفتیش کو ڈی پی او گجرات نے مدعی خاندان کی شکایات کا نوٹس لیتے ھوئے تبدیل کر دی ہے اور ایس ایچ او کنجاہ ذولفقار احمد وریاہ اور منگووال چوکی انچارج افتخار احمد کو اس ھائی پروفائل کیس کے کی مزید تفتیش کرنے سے روک دیا گیا ھے اور یہ تفتیش وویمن پولیس اسٹیشن گجرات کی انچارج سب انسپکٹر فرزانہ کوثر کو سونپ دی گئی ھے جنہوں نے اس مقدمہ کی تفتیش سنبھالتے ہی گاؤں لنگے جا کر متاثرہ خاندان کی داد رسی کی ھے اور متاثرہ لڑکی اور اس کی والدہ کے بیانات ریکارڈ کئے ھیں اور گرفتار ملزمان سے تفتیش کا دائرہ کار بڑھا یا ھے خاتون پولیس آفیسر فرزانہ کوثر کے تفتیش سنبھالتے ھی اس اھم کیس میں مزید پیش رفت آئی ھے اور جسمانی ریمانڈ پر ملزمان عادل نذیر جٹ سکنہ ایشرہ سے سنگین واردات میں استعمال ھونے والا اسلحہ 223 بور بندوق اور دوسرے ملزم نبیل نصیر جٹ سکنہ پاھڑیانوالی سے 30 بور پسٹل برآمد کر لیا گیا ھے اور ان ملزمان کے خلاف اسلحہ برآمدگی کے مقدمات خاتون پولیس آفیسر فرزانہ کوثر کی مدعیت میں ھی درج کئے گئے ھیں متاثرہ خاندان نے اس ھائی پروفائل کیس میں فوری کاروائی عمل میں لاکر ملزمان کی گرفتاری عمل میں لانے اور میرٹ پر تفتیش کرنے اور ان کے تحفظات دور کرنے پر آر پی او گوجرانوالہ طارق عباس قریشی اور ڈی پی او گجرات سید توصیف حیدر کا شکریہ ادا کیا ھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں