ڈپٹی کمشنر، اسٹنٹ کمشنرز، سی او ایجوکیشن کا سکولوں کا دورہ ایس او پیز پر عمل درآمد کا جائزہ لیا

گجرات(نمائندہ خصوصی) ڈپٹی کمشنرسیف انور جپہ، اسٹنٹ کمشنرز، سی او ایجوکیشن اور ایجوکیشن مینجمنٹ ٹیم کے افسران نے مختلف سکولوں کا اچانک دورہ کیا اور سکولوں میں کرونا سے بچاؤ کیلئے ایس او پیز پر عمل درآمد کا جائزہ لیا، اس دوران فرائض میں غفلت اور ایس او پیز کے مطابق اقدامات نہ کرنے پر سینئر ہیڈ ماسٹر کو اظہار وجوہ کا نوٹس، تین سکولوں کے سربراہان کو معطل کرکے انکے خلاف تحقیقات کا حکم دیدیا گیا۔ حکومت پنجاب کی ہدایا ت کے مطابق ڈپٹی کمشنرسیف انور جپہ نے سی ای او ایجوکیشن چوہدری اورنگ زیب کے ہمراہ گورنمنٹ گرلز سکول غریب پورہ اور میونسپل ماڈل گرلز سکول دورہ کیا اور ان سکولوں میں صفائی، کرونا سے طلباو طالبات، اساتذہ کرام کو محفوظ رکھنے کیلئے اقداما ت کا جائزہ لیا۔ اسسٹنٹ کمشنر کھاریاں فیصل عباس مانگٹ نے گورنمنٹ ہائی سکول باہروال،گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول دھوریہ اور گورنمنٹ گرلز ہائی سکول شمیم لالہ موسیٰ کا معائنہ کیا جہاں ان سکولوں کے سربراہان ڈیوٹی پر موجود نہ تھے اور ایس او پیز پر عملدرآمد بھی نہیں کیا گیا تھا، اسسٹنٹ کمشنر کی نشاندہی پر سی او ایجوکیشن نے تینوں سربراہان کو معطل کردیا اور ان کیخلاف انکوائری کی احکامات جاری کرتے ہوئے ڈی او سیکنڈی ری کو تحقیقاتی افسرمقرر کردیا۔دوسری طرف ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر سیکنڈری محمد پرویز نے گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول لالہ موسیٰ کا دورہ کیا جہاں ڈیوٹی سے غیر حاضر تھے اور سکول کھولنے کیلئے ایس او پیز پر عملدرآمد بھی نہیں کیا گیاتھا، ڈی او سیکنڈری کی رپورٹ پر گورنمنٹ اسلامیہ ہائی سکول لالہ موسیٰ کے سینئر ہیڈ ماسٹر کو اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کرتے ہوئے دو دن میں جواب طلب کرلیا گیا ہے۔ اسسٹنٹ کمشنر سرائے عالمگیر فہد اعجازنے گورنمنٹ گرلز ہائیر سیکنڈری سکول سرائے عالمگیر، سی ای او ایجوکیشن چوہدری اورنگ زیب نے گورنمنٹ کرسچن ہائی سکول گجرات کا دورہ کیااور ایس او پیز پر عملدرآمد کا جائزہ لیا۔ دریں اثنا ڈپٹی کمشنرسیف انور جپہ نے کہا ہے کہ کرونا لاک ڈاؤن کے بعد تعلیمی ادارے کھلنے کا پہلا مرحلہ نہایت اہم ہے طلبا و طالبات اور اساتذہ کرام کو کرونا سے محفوظ رکھنے کیلئے ایس او پیز پر عملدرآمد ناگزیر ہے انہوں نے ایجوکیشن مینجمنٹ ٹیم او ر سربراہان ادارہ جات کو ہدایت کی کہ تعلیمی اداروں کی صفائی سمیت ایس او پیز پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے، اس حوالے سے چیکنگ کا سلسلہ جاری رہے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں