حکومت BISP کا نام تبدیل کیے بغیر نئے پروگرام شروع کرے:قمرکائرہ

لاہور (جذبہ نیوز) پیپلز پارٹی وسطی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ نے کہاہے کہ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے حوالے سے درخواست دائر کی گئی ہے،پاکستان میں غربت بڑھنے کی وجہ سے محترمہ بینظیر بھٹو نے اس پروگرام کا خواب دیکھایہ پروگرام صرف خواتین کو دینے کے لیے بنایا گیا،اس پروگرام کے تحت صرف خواتین امدادی رقم حاصل کرسکتی،لاہور ہائیکورٹ میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہاکہ ملک بھر میں نوے لاکھ خواتین کے شناختی کارڈ بنائے گئے۔بدقسمتی سے آج اس کا نام تبدیل کرکے احساس پروگرام رکھ دیا۔انہوں نے کہا کہ پوری دنیا میں بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی مثال دی جاتی ہے،یہ حکومت نہ تو عوام کی خدمت کرسکتی ہے اور نہ ہی میڈیا کو آزاد دیکھنا چاہتی تھی،ہمارا کہنا ہے کہ حکومت اس پروگرام کا نام تبدیل کیے بغیر نئے پروگرام شروع کرے،عدالت نے ہماری درخواست پر حکومت سے جواب مانگا ہے۔حکومت کے اندر کے حال کھلنا شروع ہوگئے ہیں اور وہ خود ہی بیان دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اختر مینگل کا معاملہ سب کے سامنے، سیاست میں اختلاف رائے ہوسکتا ہے۔سیاست میں بات چیت کے دروازے بند نہیں کئے جاسکتے۔زرداری صاحب کی صحت اب بہتر ہے ان سے سیاسی معاملات پر بات ہوئی ہے۔فواد چوہدری نے بیان دیا نہیں بلکہ دلوایا گیا ہے اب حکومتی ایوانوں کی اندر کی باتیں باہر آنا شروع ہوگئی،یہ سمارٹ لاک ڈاؤن کی بات کرتے ہیں ان سے لاک ڈاؤن نہیں ہوسکتا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں