گوگل کا ارتھ کوئیک الرٹ سسٹم پاکستان میں بھی متعارف

گوگل نے پاکستان میں زلزلوں کے لیے اینڈرائیڈ ارتھ کوئیک الرٹ سسٹم متعارف کرادیا۔

گوگل نے منگل کو اپنے اینڈرائیڈ ارتھ کوئیک الرٹ سسٹم کو پاکستان میں وسعت دینے کا اعلان کیا ہے تاکہ زلزلے کی صورت میں پاکستانی صارفین کو فوری خبردار کیا جاسکے۔
اینڈرائیڈ ارتھ کوئیک الرٹ سسٹم ایک بلا معاوضہ اینڈرائیڈ فیچر ہے جو دنیا بھر میں آنے والے زلزلوں کا پتہ لگاتا ہے اور لوگوں کو الرٹ کرتا ہے۔
یہ نظام زلزلہ کی سرگرمیوں کا پتہ لگانے کے لیے ایکٹیو اینڈرائیڈ سمارٹ فونز میں ایکسلرومیٹر استعمال کرتا ہے۔ یہ لوگوں کو دو طریقوں سے الرٹ کرتا ہے، تلاش کے ذریعے اور براہ راست اینڈرائیڈ موبائل ڈیوائس پر خبردار کرتا ہے۔
یہ سسٹم گوگل سرچ کو فوری طور پر معلومات فراہم کرتا ہے جب لوگ زلزلہ یا زلزلہ میرے قریب تلاش کرتے ہیں تو انہیں متعلقہ نتائج کے ساتھ ساتھ مددگار وسائل کے بارے میں معلومات بھی ملتی ہیں کہ زلزلے کے بعد کیا کرنا ہے۔
وہ صارفین جو یہ الرٹس وصول نہیں کرنا چاہتے وہ ڈیوائس کی سیٹنگز میں جا کر اسے آف کرسکتے ہیں، پاکستان کے شمالی اور مغربی حصے ماضی میں کئی زلزلوں کا تجربہ کر چکے ہیں۔ اس زلزلے کے نظام کو توسیع دینے سے پاکستان میں اینڈرائیڈ صارفین کو خود بخود قبل از وقت وارننگ الرٹ موصول ہو سکتے ہیں جو انہیں ہنگامی حالات کے لیے تیار کرنے میں مدد کرینگے۔
موبائل آلات پر اینڈرائیڈ ارتھ کوئیک الرٹس سسٹم زلزلے کی شدت کے لحاظ سے دو قسم کے الرٹس دکھاتا ہے۔
ہوشیار رہو الرٹس لوگوں کو متنبہ کرتے ہیں جب 4.5 یا 3 یا 4 کی شدت کا زلزلہ آتا ہے۔ یہ معلومات زلزلے کے مرکز سے فاصلے کی معلومات کے ساتھ بھیجی جاتی ہیں۔ الرٹ فون کے موجودہ والیوم، وائبریشن، اور ڈسٹرب نہ کریں سیٹنگز کا استعمال کرتا ہے۔
ٹیک ایکشن ایک الرٹ ہے جو 4.5 سے زیادہ یا 5 اور اس سے زیادہ شدت کے زلزلے کی صورت میں پوری اسکرین پر ظاہر ہوتا ہے، ہدایات پوری اسکرین پر ظاہر ہوتی ہیں اور فون زور سے بجنا شروع ہو جاتا ہے تاکہ لوگوں کو ممکنہ طور پر پرتشدد جھٹکے کے لیے تیار ہونے میں مدد مل سکے۔
اینڈرائیڈ ارتھ کوئیک سسٹم سب سے پہلے نیوزی لینڈ اور یونان میں متعارف کرایا گیا تھا۔ اب یہ قازقستان، کرغز جمہوریہ، فلپائن، تاجکستان، ترکی، ترکمانستان، امریکا اور ازبکستان سمیت دیگر ممالک میں دستیاب ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں