غیرمعمولی طور پر عمر رسیدہ گینڈا تنزانیہ میں چل بسا

تنزانیہ:
دنیا کا سب سے معمر ترین گینڈا، تنزانیہ کے وائلڈ لائف پارک میں چل بسا جس کی عمر 57 برس تھی۔

فوسٹا سیاہ گینڈا تھا جو تنزانیہ میں گورنگورو کریٹر کے پاس واقع جانوروں کے تحفظ کی پارک میں گزشتہ تین برس سے موجود تھا۔ پارک انتظامیہ نے تصدیق کی ہے کہ یہ سیاہ گینڈا ریکارڈ عرصے تک جیتا رہا اور سب سے زیادہ عمر پانے والا سیاہ گینڈا تھا۔

پارک سے وابستہ جنگلی حیات کے ماہر ڈاکٹر فریڈی مانونگکی نے کہا کہ مادہ گینڈا قدرتی طور پر مری ہے اور اس نے زندگی کا بڑا حصہ آزادانہ طور پر گزارا۔ ریکارڈ کے مطابق فوسٹا نے اب تک گینڈوں میں سب سے زیادہ زندگی پائی اور اسے تین سال قبل تنزانیہ کی محفوظ پناہ گاہ تک لایا گیا تھا۔

سال 1965ء میں اسے یونیورسٹی آف دارالسلام کے سائنس دانوں نے فوسٹا کو ایک جنگل میں اس وقت دیکھا تھا جب اس کی عمر صرف تین برس تھی۔ یہ مادہ گینڈا 2016 تک صحتمند رہی اور اس کے بعد اس لاغر اور بیمار ہوگئی اور لکڑبھگوں کے حملے کے بعد یہ شدید زخمی ہوگئی تھی۔ اس حملے میں اس کی ایک آنکھ ضائع ہوگئی تھی جس کے بعد اسے پارک کے حفاظتی حلقے میں شامل کیا گیا تھا۔

اس سے قبل فرانس میں قید ایک مادہ گینڈا 55 سال کی عمر میں مرگئی تھی۔ امریکا کے ایک چڑیا گھر میں سیاہ گینڈا 46 سال کی عمر میں مرگیا تھا۔ اس وقت سیاہ گینڈوں کو بقا کو خطرات لاحق ہیں اور ان کی تعداد 5500 کے لگ بھگ ہی رہ گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں