خواتین کی معاشی بااختیاری کے بغیر غربت کا خاتمہ ممکن نہیں، ملکہ نیدرلینڈ

لاہور(نیوز ڈیسک)اقوام متحدہ کی خصوصی ایڈوکیٹ اور نیدر لینڈ کی ملکہ میکسیما کا کہنا ہے کہ خواتین کی معاشی بااختیاری کے بغیر غربت کا خاتمہ ممکن نہیں۔ فنجا جیسی ڈیجیٹل مالیاتی خدمات کے اداروں کو گھریلو خواتین کو چھوٹی صنعتوں اور کاروبار کے لئے معاونت فراہم کرنی چاہئے۔ ان خیالات کا اظہار ملکہ میکسیما نے گزشتہ روز غالب مارکیٹ گلبرگ میں چھوٹے دکانداروں سے ملاقات میں کیا۔ اس موقع پر فنجا کے چیف ایگزیکٹو آفیسر کاشف شاہد نے ملکہ میکسیما کا خیرمقدم کیا اور انہیں چھوٹے کاروباری افراد کے مالی معاملات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ انہوں نے ملکہ کو بتایا کہ کیسے فنجا ان کی مالی معاونت کے ساتھ ساتھ ٹیکنالوجی کے ذریعے ان کے کاروبار میں تبدیلی لا رہا ہے۔ ملکہ اڑتالیس سالہ صوفی بی بی سے بھی ملیں جن کا تعلق انتہائی کم پڑھے لکھے اور غریب خاندان سے تھا اور وہ اس وقت فنجا کی ٹیکنالوجی کی مدد سے غالب مارکیٹ میں بیوٹیشن کا کاروبار کر رہی ہیں۔ ملکہ میکسیما وسیم جنرل اسٹور کے مالک محمد عابد اسلام سے بھی ملیں جن کا کاروبار کئی سال سے نقصان میں جا رہا تھا۔ جس کے بعد انہوں نے فنجا کی مدد سے ایک ملٹی نیشنل کمپنی کے ساتھ اپنی سپلائی چین بنائی اور ان کا کاروبار منافع بخش ہو گیا۔ اس موقع پر ملکہ میکسیما کا کہنا تھا یہ بات انتہائی خوش آئند ہے کہ پاکستان میں چھوٹے کاروباری افراد بھی ٹیکنالوجی سے مستفید ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فنجا جیسی دیگر کمپنیوں کو بھی چھوٹے کاروباری افراد کے لئے مال معاونت کے راستے آسان بنانے ہونگے۔ بعد ازاں فنجا کے چیف آپریٹنگ آفیسر عمر منور نے بھی ملکہ کو بریفنگ دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں