اب کتابیں شائع کرنے کے ساتھ اگائی بھی جا سکیں گی

آئرش کریٹیو ایجنسی روٹھکو نے جرمن فن کار ڈیانا شیریر کے ساتھ مل کر ایک ایسی کتاب تخلیق کی ہے جو اگ سکے گی۔ The Book That Grew ایک 22 صفحے کی کتاب ہے، جسے زندہ پودوں کی جڑوں میں تبدیلی کر کے اس طرح تیار کیا گیا ہے کہ اگنے کے بعد کتاب میں الفاظ اور ڈایا گرام نظر آئیں۔
اس کتاب کو باقاعدہ جلد بھی کیا گیا ہے اورا س میں روشنائی بھی ہے۔اس کتاب کی تیاری کا مقصد کسانوں کو بتاناہے کہ ذرائع کو جب درست طریقے سے استعمال کیا جائے تو وہ کتنا فائدہ مند ہو سکتے ہیں اور یہی اس کتاب کا بھی موضوع ہے۔

اس کتاب کی تیاری کا آغاز اس سال فروری اور مارچ میں شروع ہوا تھا۔ شروع میں تو ڈیانا بھی سوچنے لگیں کہ کتاب کی تخلیق کیسے ممکن ہوگی کیونکہ گھاس کے بیچ، مٹی، پانی اوردھوپ ہی جڑوں کو اگانے میں مدد دیتی ہیں۔

اس کتاب کی تیاری میں اصل چیلنج یہ تھا کہ کتاب میں درج تمام الفاظ اور ڈایاگرام واضح نظر آنے چاہیے۔ تاہم اس ساری محنت کا نتیجہ ایک ایسی زبردست کتاب کی شکل میں نکلا ہے جو باقاعدہ بڑھ سکتی ہے۔

اس کتاب میں ہرچیز ہی گھاس سے بنائی گئی ہے۔ روشنائی کے لیے سیاہ رنگ جلی ہوئی گھاس سے لیا گیا ہے۔
اس کتاب کے 22 صفحات ہیں۔ ان صفحات کا سائز اے 3 یعنی 11 ضرب 17 انچ ہے۔ یہ صفحات کافی ہلکے بھی ہیں۔ اس کتاب کی نمائش سارے ملک میں کی جائے گا۔ اس کتاب میں استعمال کی گئی جڑیں مٹی سے الگ ہونے کے بعد مرنا شروع ہو گئی تھیں، لیکن ایسا ہونے سے پہلے ہی اسے ڈیجیٹل شکل میں محفوظ کر لیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں