مریم نواز جیل میں چلہ کاٹتی ہیں

پیپلز پارٹی کی ایک خاتون رہنما نے مریم نواز کو کچھ لکھ کر بھیجا ہے اور وہ شام پانچ سے سات بجے کے دوران چلہ کاٹتی ہیں۔ عارف حمید بھٹی

سینئیر صحافی عارف حمید بھٹی نے انکشاف کیا ہے کہ مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز جیل میں ایک چلہ کاٹ رہی ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق عارف حمید بھٹی کا مزید کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی سے آئی ایک خاتون جو کبھی ن لیگ پر بہت برستی تھی، نے مریم نواز کو کچھ لکھ کر بھیجا ہے اور وہ شام پانچ سے سات بجے کے دوران چلہ کاٹتی ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ اس خاندان کا ایک مرد تین سال قبل بہت بیمار ہو گیا تھا تو کسی نے ان کو بتایا تھا کہ آپ پر کالا علم کیا گیا ہے۔
مذکورہ شخص کو کھانا کھاتے ہوئے کچھ ہو جاتا تھا اور وہ علاج کے لیے لندن بھی گیا تھا جہاں پر اس کا علاج کیا گیا۔معروف صحافی محمد مالک نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ مریم نواز شام کے خصوصی اوقات میں خصوصی عبادت کرتی ہیں جس کو نیب اہلکار چلے کا نام دیتے ہیں۔

جب کہ دوسری جانب ایک میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ چودھری شوگر ملز کیس میں نیب کی حراست میں موجود مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔

مریم نواز کا اپنے والد کے ساتھ مل کر شمیم شوگر ملز ایک ارب بیس کروڑ روپے میں خریدنے کا انکشاف ہوا جس کے بعد نیب نے اس حوالے سے بھی تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ مریم نواز کے خلاف منی لانڈرنگ کے بعد اب آمدن سے زائد اثاثہ جات کی انکوائری کا بھی آغاز کر دیا گیا ہے۔ نیب ذرائع کے مطابق مریم نواز نے اپنی آمدن سے کئی گنا زیادہ اخراجات کیے۔ 2008ء میں مریم نواز نے اپنے اثاثوں کی کُل مالیت 68 لاکھ روپے ظاہر کی تھی جبکہپانامہ کے والیوم نائن میں مریم نواز نے اپنے اثاثوں کی مالیت سے متعلق جو بتایا وہ حقیقت کے برعکس ہے۔
مریم نواز نے 2008ء میں ہی چالیس کروڑ روپے کے شئیرز خریدے۔ انہوں نے اپنے والد سمیت دیگر کے ساتھ مل کر شمیم شوگر مل ایک ارب بیس کروڑ میں خریدی انہوں نے چودھری شوگر مل کے ایک کروڑ پندرہ لاکھ ستائیس ہزار کے شئیرز خریدے۔ نیب ذرائع نے بتایا کہ مریم نواز ، شوہر محمد صفدر اور بچوں کے نام اثاثہ جات کی تفصیلات مختلف اداروں سے طلب کی جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں