بھارتی جاسوس کلبھوشن کیس کا فیصلہ جولائی میں سنایا جائیگا

دی ہیگ(جے ایم ڈی) عالمی عدالت انصاف میں بھارتی جاسوس کمانڈر کلبھوشن یادیو کیس محفوظ فیصلہ رواں ماہ جولائی کے آخر میں سنایا جائے گا۔

حکومتی ذرائع کے مطابق کلبھوشن یادیو کیس کا فیصلہ جولائی کے آخری ہفتے میں آئے گا، امید ہے پاکستان کی فتح ہوگی۔

یاد رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2018ء کو پاکستان ایران سرحدی علاقے سے گرفتار کیا گیا۔ یہ بھارتی جاسوس بھارتی نیوی کا حاضر سروس افسر اور را کے ایجنٹ کے طور پر کام کر رہا تھا۔

اس کے بعد حکومت پاکستان نے بھارتی سفیر کو طلب کرکے بھارتی جاسوس کے غیر قانونی طور پر پاکستان میں داخلے اور کراچی اور بلوچستان میں دہشت گردی میں ملوث ہونے پر باضابطہ احتجاج کیا۔ اس کے بعد کلبھوشن یاادھو کے اعترافی بیان کی ویڈیو جاری کی گئی۔

بعد ازاں اپریل 2018ء میں کلبھوشن یادیو کے خلاف دہشتگردی کی دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کروائی گئی، جس کے بعد فوجی عدالت نے بھارت جاسوس کو ملک میں دہشتگردی کی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا مجرم قرار دیتے ہوئے سزائے موت سنا دی۔

گزشتہ سال مئی میں بھارت نے اپنے جاسوس کلبھوشن سنگھ یادیو کی پھانسی رکوانے کے لیے عالمی عدالت انصاف میں درخواست دائر کر دی۔ 15 مئی کو بھارتی درخواست پر سماعت کا آغاز ہوا، اس کے بعد دونوں جانب کا موقف سننے کے بعد عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں