117سالہ خاتون انتقال کے پانچ گھنٹے بعد دوبارہ زندہ ہوگئی

سانگلہ ہل(جے ایم ڈی) سانگلہ ہل میں ایک سترہ سالہ ممبر خاتون فاطمہ بی بی انتقال کرنے سے پانچ گھنٹے بعد دوبارہ زندہ ہوگئی ،ساٹھ کے قریب پوتوں ،پوتیوں،پڑپوتوں،پڑپوتیوں اور بیٹے بیٹیوں نے نانی ماں ،دادی ماں زندہ ہوگئی کے نعرے ، پانچ گھنٹے قبل بچھائی گئی صفِ ماتم پر فاطمہ بی بی کے زندہ ہوجانے کی خوشی میں پھولوں کی بارش ،میٹھے چاول پکاکر تقسیم کیے گئے پوتے پوتیاں دادی ماں سے لپٹ گئیں،مائی فاطمہ بی بی کے دوبارہ زندہ ہونے پر اہل علاقہ کی گھر والوں کو مبارک بادیں مائی فاطمہ کو دفن کر نے کے لئے کھودی جانے والی قبر ذکرِالہٰی کرتے ہوئے بند کردی ،نواحی گاؤں منڈی مڑھ بلوچاں میں لیاقت علی قصاب کی ایک سو سترہ سالہ والدہ فاطمہ بی بی ایک عرصہ سے بیماری میں مبتلاتھی گزشتہ روز مائی فاطمہ باتیں کرتے کرتے اچانک خاموش ہوگئی حتیٰ کہ اس کے جسم کی حرکت اور سانس بھی بند ہوگئی اس پر اس کے گھر والوں نے اپنی دادی کے انتقال کرجانے کی سوچ میں رونے چلانے لگے گھر میں صفِ ماتم بچھادی گئی اس کی اطلاع عزیز و اقارب کو بھی دے دی گئی بڑی تعداد میں عزیز اقارب اور اہل علاقہ جمع ہوگئے اور مائی فاطمہ کے انتقال پر اظہارِافسوس کیا جانے لگا اس کی آخری رسومات کی ادائیگی کے سلسلہ میں پانچ گھنٹے بعد مائی فاطمہ کو نہلانے کے لیے جب لکڑی کے تختے پر لٹایاگیا تو اس کے سر میں پائپ سے پانی ڈالنے پر وہ اچانک دوبارہ زندہ ہوگئی اور اس نے کہا آپ میرے کپڑے پانی سے گیلے کیوں کررہے ہیں اس پر موجود سب لوگ خوف اور پریشانی کے عالم کے ساتھ ساتھ خوشی سے ان کے چہرے بھی سرخ ہوگئے کہ اماں جی دوبارہ زندہ ہوگئی ہیں اس پر گھر میں بچھائی گئی صفِ ماتم اٹھادی گئی اور اس خوشی میں مائی پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئی اور میٹھے چاول پکاکر علاقہ بھرمیں تقسیم کیے گئے اور مائی فاطمہ بی بی سے عورتیں اور بچے بچیاں پیارلیتی رہی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں