قومی اسمبلی میں حکومتی ارکان کا شور شرابا، شہباز شریف کو تقریر نہ کرنے دی

اسلام آباد(جے ایم ڈی) قومی اسمبلی میں حکومتی ارکان نے شور شرابا کرتے ہوئے شہباز شریف کو تقریر سے روک دیا جس پر اسپیکر نے اجلاس کی کارروائی ملتوی کردی۔

اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا۔ اسد قیصر نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کو بات کرنے کا موقع دیا تو ان کی تقریر شروع ہوتے ہی حکومتی ارکان نے شور مچانا شروع کردیا، فواد چوہدری، غلام سرور اور راجہ ریاض اپنی نشستوں پر کھڑے ہو گئے اور اسپیکر سے پوائنٹ آف آرڈر پر بات کرنے کا مطالبہ کیا۔

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے حکومتی ارکان کے رویے کو نامناسب قرار دیا۔ شیریں مزاری نے کہا کہ اپوزیشن غلط کر رہی ہے ان کا حق نہیں بنتا۔ اسپیکر نے حکومتی ارکان سے کہا کہ تشریف رکھیں، اپوزیشن لیڈر کو بجٹ پربحث کا آغاز کرنے دیں۔
پیپلزپارٹی کے راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ حکومت کو پارلیمانی روایات کا علم نہیں، اسے ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا چاہیئے، آپ تو کنٹینر دینے جارہے تھے، ایک ڈائس سے ڈر گئے۔ ایوان میں شور شرابا اور ہنگامہ آرائی پر اسپیکر نے اجلاس کی کارروائی 2 بجے تک ملتوی کردی۔

ایک بیان میں مریم اورنگزیب نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کے خطاب پر حکومتی ارکان کے شور شرابہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پارلیمنٹ میں شہباز شریف کو تقریر کے لئے ڈائس دینے پررو رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں