سعودی نوجوان 14 برس بعد والد کی طرح ٹریفک حادثے میں جاں بحق

جازان (جے ایم ڈی)سعودی عرب کے صوبے جازان میں ہونے والے ٹریفک حادثے میں ایک 28 سالہ مقامی نوجوان جاں بحق ہو گیا۔ اتوار کے روز العارضہ اور ابو عریش کے درمیان راستے پر یہ واقعہ اسی مقام کے نزدیک پیش آیا جہاں 14 برس قبل اس نوجوان کا باپ بھی ایک ٹریفک حادثے میں اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا تھا۔

سعودی نوجوان محمد قاسم دوشی بارڈر گارڈز میں کام کرتا تھا۔ اس کا گھرانے میں والدہ، دو بھائی اور چار بہنیں شامل ہیں۔

قاسم کے ماموں حسن عقیلی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو میں بتایا کہ یہ حادثہ موسلا دھار بارش کے بعد قاسم کی گاڑی الٹ جانے کے نتیجے میں پیش آیا۔ عقیلی کا مزید کہنا تھا کہ اس حادثے پورے گھرانے کو غمگین کر دیا ہے اور اسی راستے پر ان کے والد کی موت کا غم تازہ ہو گیا ہے۔

جازان میں سعودی ہلال احمر تنظیم کے میڈیا ترجمان بیشی الصرخی کے مطابق اتوار کو سہ پہر سوا تین بجے العارضہ ضلع کے داخلی راستے پر سیکورٹی چیک پوائںٹ کے نزدیک مذکورہ حادثے کی اطلاع ملی۔ اس کے بعد فوری طور پر جائے مقام پر پہنچا گیا جہاں ایک شخص زخمی اور تشویش ناک حالت میں موجود تھا۔ اسے فوری طور پر طبی امداد دیتے ہوئے ابو عریش ہسپتال منتقل کر دیا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہو سکا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں