ویزا کیلیے بہن بھائی کی شادی،سوشل میڈیا پر سخت تنقید

بھارت(جے ایم ڈی) بھارتی پنجاب میں بہن اور بھائی نے آپس میں شادی کر لی لیکن ان کی آپس میں شادی کی وجہ پیار نہیں بلکہ انہوں نے ایسا آسٹریلیا کا ازدواجی ویزا (Spouse Visa) حاصل کرنے کے لیے کیا۔دونوں نے اپنی شادی رجسٹر کروانے کے لیے بھارتی پنجاب کی مقامی عدالت کو قائل بھی کیا۔ آسٹریلیا کا ویزا حاصل کرنے کے لیے بہن نے اپنے بھائی کے دستاویزات کا استعمال کیا جو پہلے سے ہی آسٹریلیا کا ویزا ہولڈر ہے۔

جعلی پاسپورٹس اور دستاویزات کی بنا پر دونوں آسٹریلیا پہنچے جہاں خاتون نے امیگریشن حکام کو بے وقوف بنا کر کامیابی سے ازدواجی ویزا (Spouse Visa) حاصل کر لیا۔ اس حوالے سے بات کرتے ہوئے انسپکٹر جے سنگھ نے کہا کہ ہماری تفتیش کے مطابق لڑکا پہلے سے ہی آسٹریلیا کا مستقل رہائشی اور آسٹریلوی ویزا ہولڈر تھا۔

بھائی نے اپنی بہن کے ساتھ مل کر جعلی دستاویزات بنوائے جس میں اپنی بہن کو کزن ظاہر کیا گیا۔

دونوں نے پہلے ایک مقامی گردوارے سے میرج سرٹیفیکیٹ حاصل کیا۔ جسے سب رجسٹرار کے آفس میں رجسٹر کروایا گیا۔ انسپکٹر جے سنگھ کا کہنا تھا کہ بہن اور بھائی نے مل کر سماجی ، قانونی اور مذہبی سسٹم کو دھوکہ دیا، اور یہ سب صرف باہر جانے کی لالچ اور خواہش میں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ان دونوں کی تلاش جاری ہے، جس کے لیے ہم نے کئی چھاپے بھی مارے لیکن تاحال ہم اُن تک نہیں پہنچ سکے۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں نے بیرون ملک جانے کے لیے لوگوں کو کئی دھوکے دیتے اور فراڈ کرتے دیکھا ہے لیکن کسی بیرون ملک کا ویزا حاصل کرنے کے لیے بہن کا اپنے ہی بھائی سے شادی کرنے کا ڈرامہ کرنا اور پھر جعلی دستاویزات بنوا کر اس شادی کو رجسٹر کروانا اپنے آپ میں یہ پہلا واقعہ ہے۔ ہمیں اس فراڈ کا علم ہوا تو ہم کافی حیران ہوئے اور ہماری آنکھیں کھُلی کی کھُلی رہ گئیں۔ سوشل میڈیا پر یہ خبر آنے کےبعد ان بہن اور بھائی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ بیرون ملک جانے اتنا بھی کیا ضروری تھا کہ بہن کو اپنے ہی بھائی سے شادی کا ڈرامہ کرنا پڑا۔ صارفین کے مطابق یہ امر قابل افسوس اور معاشرتی، مذہبی اور قانونی اعتبار سے ناقابل قبول ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں